یقین، اعتماد اور اُمید کیا ہے؟

1)  ایک دفعہ کسی گاؤں میں کئی مہینوں سے بارش نہ ہوئی، تمام گاؤں والوں نے فیصلہ کیا کہ ایک میدان میں اِکٹھا ہو کر بارش کے لیے اجتماعی دُعا کی جائے۔ چنانچہ مُقررہ وقت پر تمام لوگ میدان میں دعا کے لیے پہنچے مگر اُن میں سے صرف ایک شخص اپنے ساتھ چھتری لے کر آیا۔  یہ تھا اُس شخص کا دُعا پر یقین۔

2)  جب آپ اپنے بچے کو ہوا میں اُچھالتے ہیں تو بچہ رونے کی بجائے ہنستا ہے، کیونکہ وہ جانتا ہے کہ اُسکا باپ یا ماں اُسے گرنے نہیں دے گا۔  یہ ہے بچے کا اعتماد۔

3)  ہم ہر رات سونے سے پہلے صبح کے لیے الارم لگا کر سوتے ہیں حالانکہ ہم اس یقین سے نہیں سوتے کہ ہم صبح تک زندہ رہیں گے۔ زندگی کا یقین نہ ہوتے ہوئے  بھی جو چیز ہمیں الارم لگانے پر مجبُور کرتی ہے وہ ہے اُمید۔

اس پوسٹ کو بھی پڑھیں: تین چیزیں ہمیشہ یاد رکھیں

Sharing is caring! پوسٹ شیئر کرنے پر آپ کا بے حد شکریہ

We would love to hear from you! - اپنی رائے سے ضرور آگاہ کیجیئے

comments